کرکٹ

ثناء میر…ناقابل تسخیر!

گھر کا ماحول قدامت پسند ہرگز نہ تھااس لیے وہ اپنے بھائی اور کزنز کیساتھ گلی محلوں میں کرکٹ کھیلتی کھیلتی 2005ء میں قومی ٹیم کے ٹرائلز تک پہنچ گئی اور بغیر کسی باقاعدہ کوچنگ کے وہ پاکستانی ٹیم میں منتخب ہوگئی۔یہ ثناء میر کی کہانی ہے جو اسٹریس فریکچر کے باعث فاسٹ بولر سے اسپنر بننے پر مجبورہوئی اور اب 14برس کی طویل جدوجہد کے بعد ثناء میر ون ڈے انٹرنیشنلز میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والی اسپن بولر بن چکی ہے…یہ ایسی کامیابی اور اعزاز ہے جس پر پوری قوم کو ثناء میر پر فخر ہے!
جنوبی افریقہ کیخلاف ون ڈے سیریز کے پہلے میچ میں بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاسل کرنے والی ثناء میر نے تیسرے میچ میں وکٹ حاصل کرتے ہوئے ون ڈے انٹرنیشنلز میں اسپنر کی حیثیت سے سب سے زیادہ وکٹوں کی حامل ویمن بولر کا اعزاز اپنے نام کرلیا۔ ویمن کرکٹ میں پاکستانی ٹیم کا شمار دنیا کی ٹاپ ٹیموں میں نہیں ہوتا بلکہ گزشتہ 15برسوں سے ایک طویل جدوجہد کے بعد گرین شرٹس خود کو کسی حد تک منوانے میں کامیاب ہوئی ہے۔ اس صورتحال میں اس ٹیم کی ایک بولر کا ورلڈ ریکارڈ بنا دینا یقینا کسی کارنامے سے کم نہیں ہے۔
2005ء میں پہلی مرتبہ قومی ٹیم کی نمائندگی کرنے والی ثناء میر گزشتہ 14برسوں سے پاکستان کیلئے کارہائے نمایاں سرانجام دے رہی ہے۔ بیٹنگ کے شعبے میں اگرچہ ثناء میر نے بہت زیادہ رنز نہیں بنائے لیکن بولنگ کے شعبے میں ثناء میر کی کارکردگی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے ۔ہر موقع پر ثناء نے آگے بڑھ کر پاکستانی ٹیم کی بولنگ کو سنبھالا ہے اور 14برسوں کی طویل جدوجہد کے بعد آج ثناء میر نے بطور اسپنر سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والی اسپنر کا اعزاز اپنے نام کرلیا ہے۔
ثناء میر یقینی طور پر پاکستان میں کرکٹ کھیلنے والی لڑکیوں کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہیں بلکہ پاکستانی خواتین کیلئے ثناء اب ایک آئیکون بن چکی ہیں۔ایبٹ آباد میں جنم لینے والی ثناء میر نے پاکستان میں ویمن کرکٹ کے فروغ کیلئے بھی کام کیا ہے اور یہ ایک طرح سے دوہری ذمہ داری ہے جو ثناء میر نے اپنے کندھوں پر اُٹھائی ہوئی ہے۔ کیرئیر کے ابتدائی برسوں میں عروج ممتاز کی نائب کپتان بننے کے بعد جلد ہی ثناء میر کو پاکستانی ٹیم کی کپتانی بھی مل گئی ۔ایک نوجوان اور ناتجربہ کار ٹیم کو عالمی کرکٹ میں شناخت دینے میں ثناء میر کا کردار نہایت اہم رہا ہے اور پھر نوجوان کھلاڑیوں کی گرومنگ میں بھی ثناء میر کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ ایک عرصے تک قومی ٹیم کی قیادت کرنے کے بعد اب ثناء میر کھلاڑی کی حیثیت سے ایکشن میں دکھائی دیتی ہیں اور اس حیثیت میں بھی ثناء میر نمایاں ہیں جو سینئر کھلاڑی کے طور پر ایک مشعل راہ کی حیثیت رکھتی ہیں۔
جب ثناء میر نے انٹرنیشنل کرکٹ کا آغاز کیا تو ان کیساتھ کھیلنے والی کئی کھلاڑی آہستہ آہستہ منظر سے ہٹتی گئیں اور موجودہ سلیکشن کمیٹی کی تمام اراکین ثناء میر کیساتھ پاکستان کی نمائندگی کرچکی ہیں مگر بے مثال فٹنس اور عمدہ کارکردگی کی حامل ثناء میر آج بھی پوری طرح چاک وچوبند ہیں اور ہر میدان میں پاکستان کا جھنڈا بلند کرنے کا عزم لیے ثناء میر آج بھی ناقابل تسخیر ہیں!